سادہ ہیں ان حُرُوف میں مطلب سلے ہوئے

Posted: 2010/08/25 by admin in اردو شاعری, غزل

قدغن لگی ہے سوچ پہ اور لَب سلے ہوئے
اور چاک تک قفس کے مرے سَب سلے ہوئے

نکلا ہوں کتنے زعم سے دُنیا کے سامنے
پہنے ہوئے یہ چیتھڑے بے ڈَھب سلے ہوئے

صدیوں کی گھاٹیوں میں یہ لمحوں کی مشعلیں
گہرے فلک پہ اختر و کوکب سلے ہوئے

مشکل کہاں ہے میرے سوالوں کو بوجھنا
سادہ ہیں ان حُرُوف میں مطلب سلے ہوئے

آنکھوں میں سُرخ ڈوریاں عمروں سے ساتھ تھیں
اس دِل کے زخم پھر بھی رہے کب سلے ہوئے

جُوں جُوں چمن میں سُرخی پروتی گئی بہار
کھلتے گئے ہیں گھاؤ مرے سَب سلے ہوئے

ایسا بیاں کا زور کیا تھا اگر عطا
کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئے

 

یاور ماجد

 

 Transliteration

 

 sile huay

Yawar Maajed

qadGHan lagi hai soch pe aur lab sile huay
aur chaak tak qafas ke mire sab sile huay

nikla hooN kitne zo’m se duniya ke saamne
pehne huay yeh cheethRe be Dhab sile huay

sadiyoN ki ghaaTiyoN meN yeh lamhoN ki mash’aleN
gehre falak pe jugnu se kokab sile huay

mushkil kahaaN hai mere savaaloN ko boojhna
saada haiN in huroof meN matlab sile huay

aaNkhoN meN surKH DoriyaN umroN se saath theeN
is dil ke zaKHm phir bhi rahe kab sile huay

jooN jooN chaman meN surKHi piroti gayi bahaar
khulte gaye haiN ghaao mire sab sile huay

aisa bayaaN ka zor kiya tha agar ata
kyooN hoNT de diye mujhe yaa rab sile huay

Read this Ghazal on FaceBook

10 people like this.
    • sab sey pehley to facebook par aik taveel waqfey key baas wapsi mubarak ho. ghazal bohat acchi hai. aap ki mushkil pasand tabiyat ka aap ki shayirana istaidaad key sath khoob milaap hua hai, jis key sabab aap khasi mushkil zameenoN meN boha…t umda ash’ar keh laitey haiN. doosra, chootha, saatvaN, aur aakhri shair bohat ziyada pasand aaya. matley key pehley misrey meiN mazeed ravani layi ja sakti hai, jaisey: "qadghan lagi hai soch pe, lab haiN siley huey”.

      bohat umda dost. khoosh rahaiN.See More

      August 25 at 10:51pm · 1 personLoading…
    • Yawar,

      Yeh Shair bohat hee Aaala hay bhai:

      صدیوں کی گھاٹیوں میں یہ لمحوں کی مشعلیں
      …گہرے فلک پہ اختر و کوکب سلے ہوئے

      Wah Wah ….See More

      August 25 at 10:58pm
    •  جُوں جُوں چمن میں سُرخی پروتی گئی بہار
      کھلتے گئے ہیں گھاؤ مرے سَب سلے ہوئے
      Zabardast…..!Mashallah
      August 25 at 11:00pm
    • ایسا بیاں کا زور کیا تھا اگر عطا
      کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئے

      First of All Yawer , we had to wait this long to see this GhazaL?
      Welcome, Its a fresh breath of air
      …Fantastic GhazalSee More

      August 25 at 11:11pm
    •  بہت خوب یاور۔۔۔ اتنے دن کی غیر حاضری کا حساب چکا دیا ایک ہی غزل سے۔۔۔۔ مگر بھائی حساب چکتا کر کےرک نہ جانا۔۔۔یہاں تو ھل من مزید ہی کا نعرہ ہے!۔ جیو!۔
      August 25 at 11:17pm
    •  ایسا بیاں کا زور کیا تھا اگر عطا
      کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئے

      kya baat hai yawar bhai wah wah maza aagaya Safi sahib kay naaray say mutafiq hoon
      salamat rahain

      August 25 at 11:54pm
    •  Yawar…yar kia achi ghzal kahi hay…main pahlay bhi kah chuka hoon kay tum aik sahbe asloob shair hoo…tum bilkul mukhtalif zameenain tarashtay ho aur phir isay khoob nibhatay ho…is zameen main kahna pitay ko pani karna hay…subhanaalah
      August 26 at 12:45am
    •  ہلو یاور ماجد صاحب۔۔واپسی مبارک ہو ۔آپ کا بہت انتظار رہا۔۔غزل عمدہ ہے اور دوسرا چھٹا اور ساتواں ۔۔یہ تین اشعار بہت اچھے لگے ۔واااااااااہ ہ ہ ۔سلامت رہئے۔
      August 26 at 1:04am
    • tamaam ghazal hi la.jawab hai magar matla’ ki kyaa hi baat hai
      ایسا بیاں کا زور کیا تھا اگر عطا
      کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئے

      buhat hi sachaa aur dil ko choo jaaney waalaa she’r!
      …buhat si daad!!!See More

      August 26 at 5:10am
    •  اکھیاں اور ہونٹ اور دماغ ترس گیا تھا اس لہجہ اور اس رچائو کی غزل دیکھنے اور محسوس کرنے کو۔ شکر ہے آپ آئے۔ خوش آمدید۔
      کای خوب صورت غزل ہے۔ تما م اشعار خوب۔ دوسرا اور آخری شعر بہت ہی عمدہ ہیں۔ جیتے رہیے۔
      August 26 at 5:21am · 2 peopleLoading…
    •  اچھی غزل ہے یاور بھائی۔۔۔سبھی شعر اچھے لگے۔۔۔ اللہ آپ کو شاد و آباد رکھے۔۔
      August 26 at 5:49am
    • جُوں جُوں چمن میں سُرخی پروتی گئی بہار

      کھلتے گئے ہیں گھاؤ مرے سَب سلے ہوئے

      ایسا بیاں کا زور کیا تھا اگر عطا

      کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئے

      بہت خوب یاور۔ پُر لُطف غزل ہے۔ بہت سی داد و تحسین آپکے کی خدمت میں۔See More

      August 26 at 6:51am
    • یاور ماجد تمام احباب کا بہت شکریہ، واپسی پر پرخلوص پیغامات کا بھی اور غزل کی پسندیدگی کا بھی۔
      August 26 at 7:07am
    • سب سے پہلے تو اظہار جشن ہے یاور ماجد کو یہاں دیکھ کر۔ رونق آگئی ہے ایک تیرے انے سے
      یار تم بہت منفرد شاعر ہو اور میرے بہت پسندیدہ۔۔ کیس عمدہ غزل ہے یاور کیسی عمدہ غزل ہے۔ جناب جانی،پیارے ساحب اب کہیں مت جانا
      غزل کے آخری شعر نے تو لوٹ لیا

      ایسا ب…یاں کا زور کیا تھا اگر عطا
      کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئے

      سلامت رہو اور جگ جگ جیوSee More

      August 26 at 10:33am · 1 personLoading…
    • یاور ماجد Thanks Abbu Ji, and thanks Ali, I have no words to show my gratitude for your comment.
      August 26 at 11:07am
    •  Bohat Aala . Tag Karnay Ka Shukriya.
      August 26 at 11:39am
    •  awesome…………..
      August 26 at 12:02pm
    •  ایسا بیاں کا زور کیا تھا اگر عطا
      کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئے

      کیا تیور ہیں اور کیا اچھی غزل ہے ۔ خوش آمدید جناب ۔ شکریہ کہ آپ نے آتے ہی ایک نہایت اچھی غزل سے نوازا ۔ سلامت و شاد باد رھئے ۔

      August 26 at 12:20pm
    • یاورآپ ہر ایک سے دوہری مبارکباد قبول کر رہے ہیں جو بالکل بر حق ہیں ۔۔لوگ آپ کو دیکھ کر کتنے خوش ہوئے ہیں آپ اسی سے اندازہ لگا لیں ۔۔ورنہ یہاں کتاب چہرہ پر ایسے ایسے بھی ہیں جو اگر ایک دن کے لیے بھی غائب ہو جائیں تو لوگ اس کی مبارکباد دی…تے ہیں
      🙂
      غزل مشکل زمین مین ہے اور ہر کسی کا اس زمین میں شعر کہہ لینا ممکن نہیں ۔

      ایسا بیاں کا زور کیا تھا اگر عطا
      کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئے

      میری طرف سے تین مبارکبادیں ۔۔ ایک تو واپسی کی ۔۔۔دوسری اس غزل کی ۔۔۔ اور تیسری ہر دلعزیزی کیSee More

      August 26 at 2:05pm · 1 personLoading…
    • Yawar Bhai…

      lovely to read you after a long break.

      This is the way one should come back. A very good one.

      kyooN hoNT de diye mujhe yaa rab sile huay

      I could remember verses from W.B. Yeats poem Human Dignity

      So like a bit of stone I lie
      Under a broken tree.
      I could recover if I shrieked
      My heart’s agony
      To passing bird, but I am dumb
      From human dignity.See More

      August 26 at 2:06pm
    • سعود بھائی، آپ کی تینوں مبارکبادیں قبول اور یہ کہنا چاہوں گا کہ آپ لوگوں کی محبت نے مجھے شرمندہ کر دیا ہے، اس لئے کہ فیس بک کو چھوڑ کر جانا آپ سب سے ارادی طور پر دور ہونا شعوری فیصلہ تھا جو کہ اب غلط لگ رہا ہے۔ لیکن کیا کریں، روزگار کے م…سائل بعض اوقات آدمی کو ایسے کام کرنے پر مجبور کر دیتے ہیں۔ میں آپ کا، عرفان ستار، مسعود قاضی، جمیل الرحمن، امجد شہزار، مجید اختر، علی زبیر اور کامران حیدر سمیت باقی تمام دوستوں کا بےحد مشکور ہوں، اتنی محبت اور کہاں ملے کی مجھ جیسے آدمی کو۔
      آپ سب بہت خوش رہیں
      ،See More
      August 26 at 2:27pm
    • Kamran, Yeats poem is one of my favorites.. I did not have this in mind when writing this but I can see the connection straightaway… for others who have not read this beautiful poem, here it is, in its full form

      _____________________
      Huma…n Dignity

      Like the moon her kindness is,
      If kindness I may call
      What has no comprehension in it,
      But is the same for all
      As though my sorrow were a scene
      Upon a painted wall.

      So like a bit of stone I lie
      Under a broken tree.
      I could recover if I shrieked
      My heart’s agony
      To passing bird, but I am dumb
      From human dignity.
      _____________________

      … aaah…. as though my sorrow were a scene upon a painted wall…See More

      August 26 at 2:31pm · 1 personLoading…
    • نکلا ہوں کتنے زعم سے دُنیا کے سامنے

      پہنے ہوئے یہ چیتھڑے بے ڈَھب سلے ہوئے

      صدیوں کی گھاٹیوں میں یہ لمحوں کی مشعلیں

      گہرے فلک پہ اختر و کوکب سلے ہوئے

      ایسا بیاں کا زور کیا تھا اگر عطا

      کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئے

      کمنٹ کرنے کے لئے شعر منتخب کرنا چاہا تو ہر شعر اپنی جانب بلانے لگا۔۔۔۔

      بہت عمدہ غزل ہےSee More

      August 26 at 3:08pm
    •  bhot khoob yawar bhai kafi arsy bad aap ka kalam parhny ko mila aur bhot lutf aaya ,salamat rahen
      August 26 at 4:37pm
    •  Yeh keh laagey hai ik sharab ka jaam
      Yeh ghazal aap ko mubarik ho//
      August 26 at 6:48pm
    • صدیوں کی گھاٹیوں میں یہ لمحوں کی مشعلیں
      گہرے فلک پہ اختر و کوکب سلے ہوئے

      جُوں جُوں چمن میں سُرخی پروتی گئی بہار
      کھلتے گئے ہیں گھاؤ مرے سَب سلے ہوئے

      ایسا بیاں کا زور کیا تھا اگر عطا
      کیوں ہونٹ دے دئیے مجھے یارب سلے ہوئۓ

      ياور بھائ طويل عرصے کی غير حاضری کے بعد آپ کی تشريف آوری اور پھر اتنے عمدہ کلام کی تخليق پر اس بندہ ء نا چيز کی طرف سے دوہری مبارک قبول فرمائيںSee More

      August 27 at 1:15am
    •  Yeh jo laagey hai aik jaam-e-sharab/Yawaree! yeh ghazal mubarik ho//
      August 27 at 8:52am
    • یاور ماجد Thanks once again Abbu Ji, your poetic comment is an honor for me.
      Thanks Zakir Bhai for the welcome message and liking the Ghazal.
      August 27 at 9:12am
    •  ماشااللہ۔۔۔۔۔۔ اللہ کرے زورِ قلم اور زیادہ ۔ ۔ ۔ ۔ اوّلاً ۔۔۔۔۔ تو میں بھر پور تائید کروں گا عرفان ستار صاحب کی بات کی ۔ کہ اتنی مدّتِ مدید کے بعد آپ کی واپسی اور اس طور غزل بکف ۔ ۔ ۔ ۔نہایت مسرّت و شادمانی کا موجب ہے ۔ ۔ بالخصوص دوسرا اور آخری شعر بہت خوب ہے ۔۔۔۔۔۔ بھائی ۔ ۔میں صدقِ دل سے دُعا گو ہوں
      August 27 at 11:26am
    • یاور ماجد ضیا ترک بھائی۔۔ میرے نوٹس میں خوش آمدید، بہت خوشی ہوئی آپ کو یہاں دیکھ کر، تعریفی الفاظ کا شکریہ، میں تو بس اپنی سی کوشش لگا رہتا ہوں، اگر آپ لوگوں کو پسند آئے تو میری محنت کا پھل یہی ہے۔
      August 27 at 1:59pm
    •  Thats a beauty – I remember reading some of your poetry at the Uni time and used to think its poet in the making….and you have just proven that.
      Like father like son 🙂
      August 29 at 4:47am
    • یاور ماجد Thanks Asim, appreciate your kind words. Indeed, I had been writing long before getting into university, actually at that time I was far more prolific than I have ever been after that. Please checkout my notes section, there are other poems and ghazals you might like.
      August 29 at 8:18am
    •  سوری غزل تک آتے آتے کچھ دیر ہو گئی ۔۔۔۔۔ فیس بک سے آپ کے غائب ہونے کا افسوس ایسی اچھی غزل دیکھ کر ختم ہو گیا ہے۔۔۔۔۔ مجھے مطلع اور مقطع دونوں ہی بہت پر اثر لگے ہیں ۔۔۔۔ ہمیشہ کی طرح آپ کا منفرد ڈکشن اس غزل میں بھی نمایاں ہے۔۔۔۔۔
      September 3 at 12:17pm
    •  نکلا ہوں کتنے زعم سے دنیا کے سامنے
      پہنے ہوئے یہ چیتھڑے بے ڈھب سلے ہوئے
      واہ کیا ہی خوبصورت شعر ہے ۔۔۔۔۔ ایک عجیب سی کیفیت سے بھرپور۔۔۔۔۔
      September 3 at 12:18pm
    • یاور ماجد Thanks Gulnaz
      September 3 at 12:47pm
    •  اگر آپ یہی چیتھڑے پہن کر نکلے ہیں تو زعم تو ہونا ہی تھا نا۔۔۔۔۔۔۔دیکھیں نا کیا غزل کے ساتھ لوٹے ہیں۔ ایسی رواں اور پُر معنی غزل پڑھ کر جی خوش ہو گیا ۔۔اور تبصرے تو اتنے ہو چکے کہ میرا کچھ کہنا چہ معنی۔
      کیوں ہونٹ دے دیئے مجھے یارب سلے ہوئے
      September 4 at 12:44am
    • یاور ماجد Thanks Talat.
      September 4 at 8:50am
    •  Very nice, ghazal la.jawab hai . Tag Karnay Ka Shukriya
      September 16 at 9:34am
    •  Bohat khoobsurat aur murassah ghazal hey, jeetay raho
      September 19 at 11:46am
    • یاور ماجد شکریہ حسن صاحب، آپ کا حسنِ نظر ہے
      September 19 at 11:48am
    •  bohut umda ghazal hai Yawer bhae, bohut lutf aya!
      Thanks tagging
      Allah speed!
      September 23 at 1:20pm
    •  ویلکم یاور بھائی ۔۔۔ ایک اچھی غزل کے ساتھ واپسی ہوئی ہے آپ کی ۔۔ آپ اچھی غزل کہتے ہیں ۔۔ سلے ہوئے جیسا قافیہ نبھانا مشکل تھا ۔ غزل میں اس مشکل کا احساس ہو رہا ہے ۔ ایک اور بات کہ آپ نے مضامیں کو بہت سلیقے سے شعر کیا ہے ۔۔ بہت خوب
      October 4 at 3:24am
    •  Bohot khoob Yawar. Barri muharat se ghazal kehte hen aap. Kya baat he.
      October 7 at 7:59am
    •  نکلا ہوں کتنے زعم سے دُنیا کے سامنے
      پہنے ہوئے یہ چیتھڑے بے ڈَھب سلے ہوئے
      زبردست
      October 20 at 7:26am
  • جواب دیں

    Fill in your details below or click an icon to log in:

    WordPress.com Logo

    آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

    Google photo

    آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

    Twitter picture

    آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

    Facebook photo

    آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

    Connecting to %s