کئی طوفان آئیں گے اب اس سیلاب سے آگے

Posted: 2009/11/05 by admin in اردو شاعری, غزل

کئی طوفان آئیں گے اب اس سیلاب سے آگے
کہانی تو چلے گی اختتامی باب سے آگے

تخیّل ساتھ ہے، بے خوابیوں کا پھر گلہ کیسا
کئی اک خواب باقی ہیں شکستِ خواب سے آگے

خدا کے نام پر کتنے خدا ہم نے بنا ڈالے
جبیں پر ہیں کئی سجدے، گڑی محراب سے آگے

مرے شعروں میں لفّاظی سے بڑھ کر بھی بہت کچھ ہے
معانی ڈھونڈنے ہیں تو پڑھو اعراب سے آگے

ابھی سے پاؤں کے چکّر سے یاور تھک گئے کیونکر
بھنور باقی کئی ہیں اور اس گرداب سے آگے

یاور ماجد

Read this Ghazal on Facebook 

 

  •  
    7 people like this.
    • Zafar Khan واہ جناب۔ عمدہ غزل ہے۔ بہت سی داد۔
      November 5, 2009 at 11:41am
    • Kamran Haider Bukhari مرے شعروں میں لفّاظی سے بھی زیادہ بہت کچھ ہے
      معانی ڈھونڈنے ہیں تو پڑھو اعراب سے آگے

      Brilliant…

      November 5, 2009 at 12:04pm
    • یاور ماجد کھوسہ صاحب، ظفر صاحب، صغیر صاحب اور کامران صاحب، پسندیدگی کا بے حد شکریہ
      November 5, 2009 at 12:26pm
    • Majeed Akhtar کئی طوفان آئیں گے اب اس سیلاب سے آگے
      کہانی تو چلے گی اختتامی باب سے آگے

      Mujhay to matla maza de gaya. Acchi gazal hay Yawar. Weekend ka tohfa !!! . Salamat raho.

      November 5, 2009 at 12:30pm
    • Shoaib Afzaal achi ghazal hay khob mazameen bandhay hain ap nay…ghazal ka husn aik mukhtalif qafiay ka istamal aur ilfaz ki nae tarakeb tarashnay may hay jo ap ki genuinity ka sabot hay…kaye ka istamal ap nay lag bhag 4 ashar may kia hay lagta hay khayal ki aik he mauj ya kam say kam aik nashist may likhi gae gazal hay…maza aya gazal parh kay inshalah ap kay kalam say mustafid hotay rahain gay.
      November 5, 2009 at 1:43pm
    • Zarrah Hyderabadie بہت خوب یاور صاحب واہ واہ
      November 5, 2009 at 1:45pm
    • یاور ماجد درست فرمایا شعیب صاحب، دوسرے شعر کے پہلے مصرعے کے علاوہ جو بعد میں احمد صفی بھائی کی رائے پر تبدیل کیا، باقی سب ایک ہی نشست کے اشعار ہیں
      آپ کے تعریفی الفاظ کے لئے بے حد مشکور ہوں،
      ذرہ صاحب، آپ کی نوازش ہے، شکریہ
      November 5, 2009 at 2:29pm
    • عرفان ستار صاحب کا شکریہ جنہوں نے لفظ زیادہ کی نشاندہی کی، میں نے مصرعہ تبدیل کر دیا ہے

      مرے شعروں میں لفّاظی سے بھی بڑھ کر بہت کچھ ہے
      معانی ڈھونڈنے ہیں تو پڑھو اعراب سے آگے

      …شکریہ عرفان صاحبSee More

      November 5, 2009 at 2:38pm
    • Irfan Sattar aray Yawar sahib aisi bhool chook to hum sab hi sey hoti hai. ehbaab sey share kartey huey aadmi itni bareek-beeni sey kahaN daikhta hai? Ghazal bohat umda hai, ashkar bohat khoob aur zameen nihayat taza! Zindabad.
      November 5, 2009 at 3:07pm
    • Naheed Virk تخیّل ساتھ ہے، بے خوابیوں کا پھر گلہ کیسا
      کئی اک خواب باقی ہیں شکستِ خواب سے آگے
      waah!
      November 5, 2009 at 5:45pm
    • Faiz Alam Babar wah bhot umda yawar bhaii 2nd sher tu dil main utar gia bhot pasand aaya thankx 4 share
      November 5, 2009 at 6:15pm
    • Khushbir Singh Shaad Khuda key naam par kitney khuda hum ney bana daaley;
      bahut achhi ghazal hai Yawar sahib
      November 5, 2009 at 10:34pm
    • Nasir Ali bohat khoob Yawar Sahib.
      November 5, 2009 at 11:31pm
    • Masood Quazi مرے شعروں میں لفّاظی سے بھی بڑھ کر بہت کچھ ہے
      معانی ڈھونڈنے ہیں تو پڑھو اعراب سے آگے

      بالکل بامعنی اشعار اور تنگ قافیہ میں کمال کے شعروں سے مرصع غزل مبارک ھو

      November 5, 2009 at 11:50pm
    • yawar..tumhara kamal yay hay kay tum seedhay sadhay shair kahtay hi naheen hooo.apni zameen tarshtay ho aut phir usko nibhanay main lag jatay ho..is liyay tumhari ghazal infaradiyat kay ilwa aik khas maza daiti hay…bohat khoob
      matla bohat …acha lagaSee More
      November 6, 2009 at 12:39am
    • Ali Zubair boht achchi ghazal hay yaawer maajid..bila shuba ye pichli ghazlon ka tasalsul hay,,or khoob hay,,boht si dad yawer sahb
      November 6, 2009 at 3:00am
    • اعجاز عبید مشکل زمین میں اچھی غزل، اور یوں کہنا چاییے کہ ایک ہی نشست میں کہی گئی ہے تو آسان غزل۔ پھر بھی غزل میں واقعی محض لفاظی نہیں ہے۔ شکریہ یاور۔
      November 6, 2009 at 3:47am
    • Saud Usmani زرا تاخیر سے پہنچا اور اس وقت بھی بھاگ دوڑ میں ہوں ۔۔۔صرف حاضری لگوانے اور مبارک باد دینے کی گنجائش ہے۔۔قبول کریں
      November 6, 2009 at 4:22am
    • یاور ماجد ناہید جی، فیض صاحب، خوشبیر صاحب، ناصر صاحب، علی صاحب، اعجاز صاحب اور سعود صاحب، وصی صاحب آپ سب کا غزل پسند کرنے کا بہت شکریہ۔
      November 6, 2009 at 7:12am
    • Janaab bohat mushkil zamiin meN bohat”saaf suthri”
      Ghazal.har shair apne mAani ke tayyun ke saath
      iblaaGh ki kisi paichiidagi se nahiiN guzaar rahaa.
      Khush rahiye aur maiN aap kaa matlA paRhte
      huye huaa ravaanah…………………
      …”kaii tuufaan aaiN ge ab is sailaab se aage
      kahaani tau chale gi iKhtetaami baab se aage”See More
      November 6, 2009 at 8:13am
    • یاور ماجد بہت محبت آپ کی عزم صاحب، حوصلہ افزائی پر بہت شکر گزار ہوں
      November 6, 2009 at 8:15am
    • Annie Akhter yaawar saheb…….. buhat khoob. khush raheay 🙂
      November 6, 2009 at 4:43pm
    • Annie Akhter khuda taala aap qalam ko mazeed tawanai aata karay. ameen.
      November 6, 2009 at 4:44pm
    • یاور ماجد غزل کی پسندیدگی اور دعا کے لئے بے حد شکریہ عینی آپا
      November 6, 2009 at 5:21pm
    • Gulnaz Kausar umda ghazal hay yawar … bohat khoob …
      November 6, 2009 at 6:42pm
    • یاور ماجد Thanks Gulnaz
      November 6, 2009 at 8:26pm
    • یاور بھائی ! محفل میں دیر سے شامل ہوا ہوں اس کے لیے معذرت۔ آپ کی ہر غزل اپنی جگہ ایک حسن اور حسن_بیان کا نمونہ ہوتی ہے۔ یہ غزل بھی آپ کے اپنے اچھوتے انداز کی غزل ہے۔ احباب نے سچ کہا کہ آپ اپنی زمین اور تراکیب خود تراشتے ہیں۔ اور پھر یہ بھی …کہتے ہیں کہ ‘زور_ سخن جو ہوتا برابر تراشتے‘ ۔
      اس غزل میں سبھی اشعار اچھے ہیں۔ مجھے دوسرے شعر میں ‘بے خوابیوں‘ اچھا نہیں لگ رہا ۔اسے آپ ذاتی پسند ناپسند بھی کہہ سکتے ہیں۔
      مرے شعروں میں لفّاظی سے بھی بڑھ کر بہت کچھ ہے
      معانی ڈھونڈنے ہیں تو پڑھو اعراب سے آگے
      بہت ہی اچھا شعر ہے۔See More
      November 7, 2009 at 12:26am
    • Amjad Shehzad مرے شعروں میں لفّاظی سے بھی بڑھ کر بہت کچھ ہے
      اس مصرعہ میں اگر ‘بھی بڑھ کر‘ کی بجائے ‘ بڑھ کر بھی‘ ہو تو کیسا ہے! کیا خیال ہے آپ کا۔
      November 7, 2009 at 6:11am
    • Arif Imam اچھی غزل ہے۔ امجد شہزاد کا کہنا درست ہے
      November 7, 2009 at 6:38am
    • امجد صاحب، توصیفی الفاظ کے لئے بےحد ممنون ہوں۔
      سجیسشن کا بے حد شکریہ، میں نے اس پر ایک تفصیلی جواب لکھا اور اپنے اصل مصرعے کا دفاع کرنے کی کوشش کی لیکن آخر میں یہی کھلا کہ آپ کی بات درست ہے اور لفظ ۔۔بھی۔۔ کی صحیح جگہ ۔۔۔بڑھ کر۔۔۔ کے بعد… ہی ہے
      بہت عنایت آپ کی توجہ کی
      عارف صاحب، بہت نوازش آٓپ کی بھی
      یاورSee More
      November 7, 2009 at 7:35am
    • یاور ماجد تحریر میں تبدیل کر دیا ہے، تصویر میں بھی وقت ملا تو کر دوں گا۔
      November 7, 2009 at 7:36am
    • Basheer Ahmed Khan ابھی سے پاؤں کے چکّر سے یاور تھک گئے کیونکر
      بھنور باقی کئی ہیں اور اس گرداب سے آگے

      اچھی غزل ہے۔۔۔۔

      November 7, 2009 at 4:08pm
    • یاور ماجد Thanks Bashir Sahib, I appreciate your kind words
      November 7, 2009 at 4:25pm
  • جواب دیں

    Fill in your details below or click an icon to log in:

    WordPress.com Logo

    آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

    Google photo

    آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

    Twitter picture

    آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

    Facebook photo

    آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

    Connecting to %s